لاہور (نیوز ڈیسک آن لائن) نیب نے چوہدری شوگرملز کیس میں ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز شریف اور یوسف عباس کو احتساب عدالت میں پیش کر دیا ہے جہاں ان کے مزید پندرہ روزہ ریمانڈ کی استدعا کر دی گئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق نیب اہلکار مریم نواز شریف کو

عدالت لے کر پہنچے تو وہاں لیگی کارکنان بھی بڑی تعداد میں موجود تھے جنہوں نے کمرہ عدالت میں داخل ہونے کی کوشش کی پولیس نے انہیں پیچھے ہٹانے کیلئے جدوجہد کی لیکن وہ ناکام رہی اور کارکنان نے اہلکاروں کو سائیڈ پر دھکا دے دیا اور کمرہ عدالت میں داخل ہو گئے ۔ اس دھکم پیل کے دوران کارکنان نے ایڈمن عدالت کے معزز جج کی عدالت کا دروازہ بھی ٹوٹ گیا ۔ احتساب عدالت کے جج نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے وکلاءسے کارکنان کو کمرہ عدالت سے باہر نکالنے کی ہدایت کی جبکہ کچھ دیر کیلئے سماعت بھی روک دی ۔احتساب عدالت کے جج نے وکلاءسے کہا کہ اپنے کارکنان کو سمجھائیں ، عدالت کا تقدس پامال نہ کریں ، جس کے بعد کارکنان کو کمرہ عدالت سے نکال دیا گیا اور سماعت دوبارہ شروع کر د ی گئی ۔نیب نے احتساب عدالت میں یوسف عباس اور مریم نوازشریف کے مزید 15 روزہ ریمانڈ کی استدعا کر دی ہے ۔نیب نے احتساب عدالت میں بتایا کہ مریم نوازشریف تفتیش میں تعاون نہیں کر رہی ہیں ۔ نیب اہلکار مریم نواز شریف کو عدالت لے کر پہنچے تو وہاں لیگی کارکنان بھی بڑی تعداد میں موجود تھے جنہوں نے کمرہ عدالت میں داخل ہونے کی کوشش کی پولیس نے انہیں پیچھے ہٹانے کیلئے جدوجہد کی لیکن وہ ناکام رہی اور کارکنان نے اہلکاروں کو سائیڈ پر دھکا دے دیا اور کمرہ عدالت میں داخل ہو گئے۔

Sharing is caring!